Mujhe Apne Des Mein Rehna Hai – Nazm by Umar Saleem

The Beam Magazine presents a patriotic nazm ‘Mujhe Apne Des Mein Rehna Hai‘ by Umar Saleem.

مجھے اپنےدیس میں رہنا ہے 

مجھے اپنے دیس میں رہنے دو

 

مجبوری ہے، لاچاری ہے

خودکُش کی اسے بیماری ہے

گر جان تمھیں جو پیاری ہے 

چھوڑواپنے دیس کیا کرنا ہے

چھوڑو اپنے دیس کو رہنے دو

 

مجبوری ہے تو کٹ جاۓ گی 

لاچاری ہے تو چَھٹ جاۓ گی

خودکُش کی فضا جو بھاری ہے 

رحمت سے خدا کی کٹ جاۓ گی

چمکا ہے، چمکتے رہنا ہے

مجھے اپنے دیس میں رہنے دو

 

گرمی میں بجلی مسئلہ ہے 

سردی میں گیس کا رونا ہے 

بہار کے سنگ الرجی ہے 

ہر موسم اب تو ڈرونا ہے 

چھوڑواپنے دیس کیا کرنا ہے

چھوڑو اپنے دیس کو رہنے دو

 

گرمی میں ماں کی چھاؤں ہے 

سردی میں باپ کا کمبل ہے

ہے بہار،خزاں سنگ یار کئی 

ہر موسم اِس کا گہنا ہے 

مجھے اپنےدیس میں رہنا ہے 

مجھے اپنے دیس میں رہنے دو

 

کبھی پی پی پی اسے کھاتی ہے

کبھی لِیگ کوئی چباتی ہے

کبھی آرمی کا یہ کھلونا ہے 

چھوڑواپنے دیس کیا کرنا ہے

چھوڑو اپنے دیس کو رہنے دو

 

کھانے سے ختم نہ ہونا ہے 

رحمت جب تلک بچھونا ہے 

کھانے والے بھی بھگتیں گے 

ہر سازش گر، نے رونا ہے 

مجھے اپنےدیس میں رہنا ہے 

مجھے اپنے دیس میں رہنے دو

 

جلدی وہ وقت بھی آنا ہے 

پھر سب نے یکتا ہونا ہے 

اقبال نے پھر سے آنا ہے 

قائد نے پیدا ہونا ہے 

مجھے اپنےدیس میں رہنا ہے 

مجھے اپنے دیس میں رہنے دو

 

مجھے اپنےدیس میں رہنا ہے 

مجھے اپنے دیس میں رہنے دو

 

(شاعر: عمر سلیم)

(تخلّص: عمر)

 

Mujhe apne des mein rehna hai

Mujhe apne des mein rehne do.

 

Majboori hai, lachari hai

Khud kush ki ise bimari hai

Gar jaan tumhein jo pyari hai

Choro apne des kya karna hai

Choro apne des ko rehne do.

 

Majboori hai to kat jayegi

Lachari hai to chat jayegi

Khud kush ki fiza jo bhari hai

Rehmat se khuda ki kat jayegi

Chamka hai, chamakte rehna hai

Mujhe apne des mein rehne do.

 

Garmi mein bijli masla hai

Sardi mein gas ka rona hai

Bahar ke sang allergy hai

Har mausam ab to darawna hai

Choro apne des kya karna hai

Choro apne des ko rehne do.

 

Garmi mein maa ki chaon hai

Sardi mein baap ka kambal hai

Hai bahaar, khizaan sang yaar kai

Har mausam is ka gehna hai

Mujhe apne des mein rehna hai

Mujhe apne des mein rehne do.

 

Kabhi PPP ise khati hai

Kabhi league koi chabati hai

Kabhi army ka ye khilona hai

Choro apne des kya karna hai

Choro apne des ko rehne do.

 

Khane se khatm na hona hai

Rehmat jab talak bichona hai

Khane wale bhi bhugtenge

Har sazish gar, ne rona hai

Mujhe apne des mein rehna hai

Mujhe apne des mein rehne do.

 

Jaldi woh waqt bhi aana hai

Phir sab ne yakta hona hai

Iqbal ne phir se aana hai

Qaid ne paida hona hai

Mujhe apne des mein rehna hai

Mujhe apne des mein rehne do.

 

Mujhe apne des mein rehna hai

Mujhe apne des mein rehne do.

 

(Umar Saleem)

 

For more ghazals and nazms on The Beam Magazine, CLICK HERE.

 

Digiprove sealCopyright protected by Digiprove © 2019

3
Leave a Reply

avatar
2 Comment threads
1 Thread replies
0 Followers
 
Most reacted comment
Hottest comment thread
3 Comment authors
Hadeed FatemaUmar SaleemAafaaq_Shah Recent comment authors

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

  Subscribe  
newest oldest most voted
Notify of
Aafaaq_Shah
Guest
Aafaaq_Shah

Ma shaa ALLAH..r akhri misrey to..!!👌🔥🌸

Hadeed Fatema
Guest
Hadeed Fatema

Zbrdast❤